ایجوکیٹرز بھرتی کے بارے میں سوالات اور انکے جوابات

ایجوکیٹرز بھرتی کے بارے میں سوالات اور انکے جوابات
سوال نمبر1 ۔کیا ایجوکیٹرز کے فارم کے ساتھ این ٹی ایس کا فارم لگے گا اور یہ فارم کیسے حاصل کرنا ہے۔
جواب:جی ہاں، آپ نے جب ( این ٹی ایس-ایجوکیٹرٹیسٹ) کے لیے اپلائی کیا تھا تو جو فارم ٹیسٹ کے لیے این ٹی ایس کو بھیجا تھا تو اس سے پہلے آپ نے این ٹی ایس کی سائیٹ پہ ایک اپنا اکاونٹ بنایا تھا۔آپ اپنے اکاونٹ سے لاگ ان کرکے اپنا فارم پرنٹ کرا سکتے ہیں۔fb/educators od jhang
سوال نمبر2-کیا خواتین امیدوار اس پالیسی میں بوائز سکولز میں اپلائی کرسکتی ہیں؟
جواب: اس بھرتی میں مر د امیدوران صرف مردانہ سکولز اور فی میل امیدوران صرف زنانہ سکولز میں اپلائی کر پائیں گے ۔
سوال نمبر3۔ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ میں درخواست جمع کرانے کی فیس کتنی ہے اور کیسے جمع کرانی ہے؟
جواب: ہر فارم کے ساتھ (بتیس اے چا لان فارم) اس ہیڈ نگ 100روپے کے ساتھ سٹیٹ بینک یا نیشنل بنک میں جمع کرائیں اور تین پرت (32چالان فارم –اے ) کے بینک میں دینے ہیں۔آپ کو بینک والے ایک فارم واپس کر دیں گے۔
Govt Treasury, Provincial Account No: 1 (Non Food) C-Non Tax
Revenue , Co 2-Receipts from Civil Administration & Other Functions Co 28-Social Application for Educators Services, C-02818
Education-Other-Fee, on account of application for Educator
سوالنمبر 4:کس تاریخ تک کی ڈگریز قابل قبول ہونگی؟
جواب: ۔امیدواروں کی تعلیمی قابلیت کی دستاویزات اور دیگر کوائف ( 04دسمبر 2017تک) جاری شدہ ہونے چاہیئیں ۔اس تاریخ کے بعد جاری ہونی والی دستاویزات قابل قبول نہ ہونگی۔
سوالنمبر 5:کیا تعلیمی کریئر میں کوئ ڈگری تھرڈ ڈویژن میں ہو توکیا وہ امیدوار اپلائی کرسکتاہے؟
ایسا امیدوار جس کی تعلیمی کیرئیر میں کوئی ڈگری بھی (تھرڈ –ڈویژن ) میں ہوگی۔وہ درخواست دینے کا اہل نہیں ہے۔
سوالنمبر 6:کیا ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ میں این ٹی ایس کے ٹیسٹ (پاس یا دیے بغیر ٹیسٹ) اپلائی کر سکتاہے۔
جواب:نہیں ۔
سوالنمبر 7:کیا ایجوکیٹر ز سیٹس کا اشتہار اب سکول وائز آئیگا؟
جواب:نہیں۔اس کی وجہ یہ ہے کہ اب بھرتی یونین وائز نہیں ہے۔تحصیل وائز اشہتار اب آرہے ہیں۔
سوالنمبر 8 : کیا ہر تحصیل میں سیٹوں کے لیے ہمیں ہر تحصیل میں الگ الگ اپلائی کرنا ہوگا؟
جواب : نہیں۔اب ہر تحصیل میں الگ الگ اپلائی نہیں کرنا۔اب آپ نے ہر کیٹگری کے لیے ایک فارم اور ایک چالان فارم استعمال کرناہے ۔مثال کے طور پر ( ایس ایس ای –سائنس ) کے لیے ایک فار م جو کہ اپنے پورے ضلع کی سیٹوں پہ اپلائی ہو جائے گا۔اور (ایس ایس ای ۔آرٹس ) کے لیے ایک فارم ۔اور اسی طرح باقی کیٹگریز کے لیے بھی ایک ایک فارم استعمال ہوگا۔
سوالنمبر 9 :ہمیں کیسے پتہ چلے گا کہ کس تحصیل میں کونسےسکول میں کس کیٹگری کی سیٹ خالی ہے؟
جواب: آپ جب ایک کیٹگری کے لیے ایک فارم استعمال کریں گے تو انٹرویو کے وقت یا ہوسکتا ہے انٹرویو دینے کے بعد ( آپ کو پھر آفس سے کال کی جائیگی اورآپ کو سکولز کی فہرست دے کر کہا جائیگا کہ آپ کونسے سکولز اپنی ( ترجیحات ) میں شامل کرنا چاہتے ہیں۔ہو سکتا ہے اس بار صرف (میرٹ پہ آنے والے منتخب امیدواروں کو ) انٹریواور ترجیحات کے لیے بلایا جائے ۔
سوال نمبر 10:ایجوکیٹرز کی سیٹس پہ اپلائی کرنے لیے فارم کہاں سے ملنے ہیں؟
جواب: ) فارم اپنے ضلع کےسی ای او صاحب کے ایجوکیشن اورڈی ای او صاحب کے ایجوکیشن دفاتر سے حاصل کریں۔
سوالنمبر 11:کیاشادی شدہ خواتین امیدوار اپنے خاوند کے ڈومیسائل پہ اپلائی کر سکتی ہیں؟
جواب: خواتین امیدوران اپنے خاوند کے یا اپنے ڈومیسائل کی بنیا د پر بھی درخواستیں دینے کی اہل ہونگی ۔اس ضمن میں ( این ٹی ایس ) کے ٹیسٹ میں تجویز کیا گیا ضلع حتمی تصور ہوگا۔درخواست کے ہمراہ خاوند کے ڈومیسائل اور نکاح نامہ کی تصدیق شدہ کاپیاں بھی ساتھ لگانا ہونگی ۔
سوالنمبر 12:کیا معزور اور اقلیتی امیدوار کا میرٹ تحصیل کے حساب سے بنے گا؟
جواب:ان کا میرٹ ضلع کی بنیاد پر بنے گااور ضلع کی بنیاد پر ہر کیٹگری کے لئے منظور شدہ کل آسامیوں کا معذور افراد کا 3فی صد اور اقلیتی افراد کا 5 فی صد سٹیوں
سوالنمبر 13:کیا اوپن میرٹ والے امیدواروں کا میرٹ تحصیل وائز یا ضلع وائز بنے گا؟
جواب: امیدواروں کا چناو تحصیل کی بنیا د پر مرتب کردہ میرٹ کی بنیا د پر ہوگا۔ہر امیدو ار کی اپنی تحصیل کی آسامی پہ اپلائی کرنے کی صورت میں 04 اضافی نمبر دیے جائیں گے ۔کسی تحصیل میں مقررہ تعلیمی قابلیت کے حامل امیدوار میسر نہ ہونے کی صورت میں دوسری تحصیلوں کے امیدوار بھی میرٹ کے لحاظ سے تقرری کے اہل ہونگے ۔
سوالنمبر 14:پے پروٹیکشن کیا ہے؟
جواب:ان سروس امیدوار جو کہ 2002 سے 2017 تک پہلے سے ہی ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ میں بھرتی ہیں ۔انکی سابقہ سروس کو شمار نہیں کیا جائیگا۔اس کےلیےصرف سالانہ انکریمنٹس کو ( ایک پرنسل الاونس ) بنایا جاتاہے ۔اور صرف سالانہ انکریمنٹس والی رقم ( سلیری کے ساتھ ملتی ہے) ۔
سوالنمبر 15:ہم پہلے ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ میں اپنے فرائض سرانجام دے رہے ہیں۔کیا ہمارے لیے ( این او سی ) لینا لازمی ہے۔
جواب : جی ہاں ۔ این او سی لینا لازمی ہے۔اسکے بغیر آپکی درخواست قابل قبول نہ ہوگی ۔اس کےلیے آپ درخواست کے ساتھ اپنے آرڈر کی کاپی ،جوائننگ کی کاپی ، اشتہار کی کاپی لگائیں گے ۔یہ درخواست پہلے ( اے ای او صاحب ) سے دستخط کراکے پھر ( ڈپٹی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر صاحب ) سے فارورڈ کراکے (ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر صاحب) کو جمع کرانی ہے ۔
سوالنمبر 16:سروس رول (17-اے) کے دس مارکس کسے ملیں گے ؟
جواب: رول17ائے کے تحت حاضر سروس ٹیچر سن کو مارکس نہیں ملیں گے بلکہ ان ٹیچروں کے بچوں کو نمبر ملیں گے جن کے والدین یا تو دوران سروس فوت ہو گئے ہیں یا پھر جنہوں نے میڈیکل پر ریٹائرمنٹ لی ہو۔اک اور بات یا د رہے کہ جو رول 17ائے کے تحت ایک بار والد صاحب یا والدہ صاحبہ کے بنیا د پر گورنمنٹ کے کسی بھی ادارے میں انکا کوئی بیٹا یا بیٹی اسکے مارکس لے چکا ہے تو دوبارہ اسکے بھائی یا بہن کو اسکے مارکس نہیں ملیں گے۔رول 17ائے کے لئے متعلقہ اتھارٹی سے سروس سرٹفکیٹ بنوا کر اسکی نقل ساتھ لگانا ہوگی۔مزید شٹام پیپر پر بیان حلفی دینا ہوگا کہ اسکی مراعات پہلے سے حاصل نہ کی ہیں
سوال نمبر 17:درخواستیں جمع کرانے کی آخری تاریخ کیا ہے؟
جواب:درخواستیں جمع کرانے کی آخری تاریخ 21جنوری 2018 ہے۔
سوالنمبر 18:بی ایس والے امیدواروں کا میرٹ میں 20 مارکس شامل ہونگے یا 40 مارکس؟
جواب:بی ایس امیدواروں کو بی ۔اے اور ماسٹر لیول کے الگ الگ مارکس شمار ہونگے ۔انکا میرٹ 40میں سے بنے گا۔
سوالنمبر 19: جن کی امیدواروں کی ڈگریز پہ ( سی جی پی اے ) ہے یا ڈگریوں میں مضامین کے مارکس نہیں لکھے ہوئے ۔انھیں کیا کرنا ہوگا؟
جواب: کنٹرولر بورڈ یا یونیورسٹی سے جاری کردہ رزلٹ کارڈ جس پر مضمون وار حاصل کردہ نمبر اور کل نمبر درج ہوں لف کرنا لازمی ہے ۔اگر آپ کی ڈگری میں حاصل کردہ اور کل نمبر نہیں ہیں تومتعلقہ بورڈیا یونیورسٹی سے مضامین کے مارکس شیٹ بنوا لیں۔اگر آپ کے پاس کسی لیول کے رزلٹ کارڈز ہیں مگر ڈگری نہ ہے تو آپ درخواست دینے کے اہل ہیں۔بہترہے کہ جلد از جلد ڈگری متعلقہ بورڈ یا یونیورسٹی سے ڈگر ی لے لیں
سوالنمبر 20:درخواست فارم کے ساتھ کیا دستاویزات لگانی ہیں۔
جواب: ہر لحاظ سے مکمل درخواستیں معہ تعلیمی و پیشہ ورانہ اسناد کی مصدقہ نقول ۔اصل چالا ن فارم، این ٹی ایس ٹیسٹ فارم کی کاپی،پوسٹ وائز این ٹی ایس کے رزلٹ کارڈز کی کاپی،شناختی کارڈاورڈومیسائل کی کاپی،پاسپورٹ سائز تصاویر،نکاح نامہ کی نقل (شادی شدہ خواتین کے لئے )،رول 17ائےوالے امیدوار کے لئے (سابقہ ملازم کا سرٹیفکیٹ اور شٹام پیپر)،معزورافرا د کے لیے معذوری کا سرٹیفیکیٹ وغیرہ کی کاپیاں اور درخوات فارم ( 21جنوری 2018 ) تک متعلقہ دفاترمیں جمع کرادیں۔
سوالنمب3۔تمام کیٹگریز ( ای ایس ای –بی پی ایس09) اور تمام کیٹگریز ( ایس ای ایس ی –بی پی ایس 14) کی آسامیوں کی درخواستیں مرد امیداوران ( ڈی ای او-ایلیمنٹری صاحب –مردانہ ) اور خواتین امیدوران ( ڈی ای او – ایلیمنٹری صاحبہ – زنانہ ) کے دفاتر اور بی پی ایس -16کی تمام کیٹگریز بشمول ( اے ای او –پوسٹ ) بھی
(سی ۔ای ۔او صاحب ) کے دفاتر میں درخواستیں جمع کرائیں.